ندیم نصرت کا الطاف حسین پر امریکا میں اپنے قتل کی منصوبہ بندی کا الزام

مجھے کئی طرح سے دھمکیاں دی گئیں، لندن میں میرے گھر کی فلمبندی کی گئی، ورجینیا واقعے کے بعد امریکی پولیس نے ایم کیو ایم بالٹی مور کے انچارج کو گرفتار کرکے سزا دلوائی، بعدازاں الطاف حسین نے اس شخص کو عشائیے پر مدعو کیا، ایم کیو ایم کے سابق رہنما کی گفتگو

متحدہ قومی موومنٹ (ایم کیو ایم) کے سابق رہنما اور بانی ایم کیو ایم کے قریبی ساتھی ندیم نصرت نے الزام لگایا کہ الطاف حسین نے انہیں امریکا میں قتل کرنے کا منصوبہ بنایا تھا ۔

جیو نیوز لندن کے رپورٹر مرتضیٰ علی شاہ سے گفتگو کرتے ہوئے ندیم نصرت نے کہا کہ انہوں نے الطاف حسین کی ایم کیو ایم سے علیحدگی اختیار کی جو ان کا جمہوری حق تھا، لیکن   انہیں طویل عرصے سے اس  فیصلے پر ڈرایا، دھمکایا گیا۔

یہ بھی پڑھیے

ایم کیو ایم کے بانی الطاف حسین نے پاکستانی سیاست میں واپسی کی کوششیں تیز کردیں

بانی ایم کیو ایم الطاف حسین کا کراچی، حیدر آباد میں بلدیاتی الیکشن کے بائیکاٹ کا اعلان

ندیم نصرت نے کہا کہ انہیں کئی طریقوں سے دھمکیاں دی گئیں ، ان کے گھر کی لندن میں فلم بندی کی گئی تھی  جس کی اطلاع انہوں نے کولنڈیل   پولیس اسٹیشن کو دی  تھی۔ انہوں نے تفصیل سے بتایا کہ انہیں امریکا میں بھی دھمکیاں دی گئیں جو کہ محض ایک شبہ نہیں تھا، ورجینیا میں پولیس کو واقعے کے بارے میں اطلاع دی تو پولیس افسران نے تفتیش کی تھی ۔

ندیم نصرت نے مزید بتایا کہ بعد ازاں ایم کیو ایم بالٹی مور کے انچارج کو گرفتار کر کےسزاسنائی گئی اور  دو سال کی پابندی کا حکم دیا گیا۔انہوں نے الزام عائد کیا کہ جس شخص پر امریکی حکام نے جرمانہ عائد کیا اسے الطاف حسین نے اپنی رہائش گاہ پر عشائیے پر مدعو کیا تھا۔

ایم کیوایم کی جائیداد سے متعلق کیس کی سماعت کے موقع پر اپنے خصوصی حفاظتی انتظامات کے حوالے سے بات کرتے ہوئے  ندیم نصرت نے مزید بتایا کہ”مجھ پر ٹیکساس میں بھی حملہ کیا گیا۔ امریکی حکام ٹرولنگ اور دھمکیوں کی تاریخ سے واقف ہیں۔ جب مجھے )لندن پراپرٹیز(کیس کا حصہ بننے کے لیے کہا گیا تو میں نے اپنے سیکیورٹی خدشات بیرسٹر کے سامنے پیش کیے جنہوں نے بعد میں برطانوی ہائی کورٹ کے جج جسٹس لیچ کے سامنے ثبوت پیش کیے تھے“۔

 نصرت نے کہا کہ” جج نے ایم کیو ایم والوں کو ہدایت کی کہ وہ مجھے دھمکانے سے باز رہیں  اور میرے لیے خصوصی اقدامات کی منظوری دی ،ایم کیو ایم کے وکلا کی مخالفت کے باوجود عدالت نے مجھے عمارت کا الگ داخلی راستہ استعمال کرنے اور ویڈیو لنک کے ذریعے علیحدہ کمرے سے اپنا بیان ریکارڈ کرنے کی اجازت دی“۔

واضح رہے کہ  لندن ہائیکورٹ میں ایم کیوایم  کی جائیداد وں سے متعلق امین الحق کی جانب سے دائر کردہ مقدمے کی سماعت جاری ہے۔ندیم نصرت اور فاروق ستار کو الطاف حسین کیخلاف گواہی دینے کیلیے طلب کیا گیاتھا۔ عدالت میں پیشی کے موقع پر ندیم نصرت کے لیے غیرمعمولی حفاظتی انتظامات دیکھنے میں آئے تھے۔

متعلقہ تحاریر