پاک فوج کا سی ٹی ڈی کمپاؤنڈ میں کامیاب آپریشن ، 25 دہشتگرد ہلاک ، 7 نے سرنڈر کردیا

جنوبی وزیرستان میں تھانہ وانا پر دہشتگردوں کا حملہ، عملے کو یرغمال بنا کر بھاری تعداد میں اسلحہ اور پولیس موبائل لےکر فرار ہو گئے جبکہ پشاور میں منظور شہید چیک پوسٹ پر دہشتگردوں کے حملے کو ناکام بنا دیا گیا ایک دہشتگرد ہلاک ہوگیا۔

ترجمان آئی ایس پی آر نے کہا ہے کہ پاک فوج نے بنوں میں کامیاب آپریشن کے بعد 25 دہشتگردوں کو ہلاک کردیا ہے ، جبکہ آپریشن کے دوران صوبیدار میجر اور سی ٹی ڈی کے دو اہلکار شہید ہو گئے۔ گذشتہ روز جنوبی وزیرستان میں تھانہ وانا میں دہشتگردوں نے حملہ کرکے پولیس عملے کو یرغمال بنالیا جبکہ اسلحہ اور پولیس موبائل لے کر فرار ہو گئے۔ اسی طرح پشاور میں پولیس چیک پوسٹ پر دہشتگردوں نے حملہ کیا تاہم جوابی فائرنگ میں ایک دہشتگرد ہلاک ہوگیا۔

بنوں آپریشن کے تناظر میں جاری ہونے والے آپریشن پر پاک فوج کے شعبہ تعلقات عامہ (آئی ایس پی آر) کی جانب سے جاری ہونے والے اعلامیے میں کہا گیا ہے کہ آپریشن کے دوران پاک فوج کے دس جوان زخمی ہوئے ہیں۔ دہشتگردوں کے فرار کی کوشش ناکام بنا دی گئی۔

یہ بھی پڑھیے

الیکشن کمیشن نے وزارت داخلہ کا حکم غیرقانونی قرار دے دیا، انتخابات وقت پر ہوں گے

سی ٹی ڈی کمپاؤنڈ میں سیکورٹی فورسز کا آپریشن، تمام دہشتگرد ہلاک

ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق 7 دہشتگردوں نے  سرنڈر کردیا ہے۔ جبکہ فرار ہونے والے مزید تین دہشتگردوں کو گرفتار کرلیا گیا ہے۔

ترجمان آئی ایس پی آر کے مطابق پاک فوج کے ساتھ فائرنگ کے تبادلے میں 25 دہشتگردوں کو جنم واصل کردیا گیا۔ آپریشن کے دوران شدید فائرنگ کا تبادلہ ہوا اور مرحلہ وار کمروں کو کلیئر کیا گیا۔

ڈی جی آئی ایس پی آر کے مطابق اس آپریشن کے دوران پاک فوج اور سی ٹی ڈی کے جوان انتہائی بہادری سے لڑے ، 3 دہشتگردوں کو گرفتار کیا گیا اور اس دوران 7 دہشتگردوں نے سرنڈر کردیا۔

ترجمان پاک فوج احمد شریف چوہدری کا کہنا تھا کہ اس پوری کارروائی کے دوران صوبیدار میجر خورشید اکرم جن کو دہشتگردوں نے یرغمال بنایا ہوا تھا وہ بھی بہادری سے لڑے اور شہادت کے مرتبے پر فائز ہوئے۔ ان کے ساتھ سپاہی سعید اور سپاہی بابر نے بھی جام شہادت نوش فرمایا۔

میجر جنرل احمد شریف کے مطابق دوران آپریشن سیکورٹی فورسز کے تین افسران سمیت 10 اہلکار زخمی ہوئے۔

آئی ایس پی آر کے ترجمان کا کہنا تھا کہ سی ٹی ڈی ہیڈکوارٹرز میں گرفتار 35 دہشتگردوں نے ہی یہ صورتحال پیدا کی تھی جبکہ باہر سے کسی نے حملہ نہیں کیا تھا۔ دہشتگردوں نے فرار ہونے کا مطالبہ کیا جو ردکردیا گیا۔

میجر جنرل احمد شریف چوہدری نے اپنے بیان میں کہا ہے کہ افواج پاکستان اور حکومت دہشتگردی کے ناسور کو جڑ سے اکھاڑ پھینکے کےلیے سنجیدہ ہیں۔ کسی جتھے کا امن خراب کرنے کی اجازت نہیں دی جائے گی۔ دہشتگردی کسی صورت برداشت نہیں کی جائے گی۔کسی جتھے کو پاکستان میں گھسنے کی گنجائش نہیں دی جاسکتی۔ حکومتی رٹ کو ہرحال میں قائم کیا جائے گا۔

ترجمان آئی ایس پی آر کا کہنا تھا کہ بنوں آپریشن پاک فوج کی بہادری کا منہ بولتا ثبوت ہے۔ ملک میں کسی دہشتگرد گروپ کو فعال نہیں ہونے دیں گے۔

وانا پولیس اسٹیشن پر دہشتگردوں کا حملہ

جنوبی وزیرستان کے علاقہ وانا میں دہشتگردوں نے وانا پولیس اسٹیشن پر دہشتگردوں نے حملہ کیا ، دہشتگردوں نے پولیس اسٹیشن کے دروازے پر بم دھماکہ کیا اور برق رفتاری سے کارروائی کرتے ہوئے ایس ایچ او سمیت تمام عملے کو یرغمال بنا لیا۔

دہشتگرد اس کارروائی کے دوران بھاری تعداد میں اسلحہ اور پولیس موبائل ساتھ لے گئے ، تاہم مزاحمت پر دہشتگردوں کی فائرنگ سے ایک اہلکار شدید زخمی ہوگیا۔ زخمی اہلکار کی شناخت الیاس محسود کے نام ہوئی ہے جوکہ جنوبی وزیرستان کا ہی رہائشی ہے۔

پشاور پولیس چیک پوسٹ پر دہشتگردوں کا حملہ

دوسری طرف پشاور کے علاقے سربند میں پولیس چیک پوسٹ پر دہشت گردوں نے اچانک حملہ کردیا ، تاہم چیک پوسٹ پر موجود پولیس اہلکاروں کی فائرنگ سے ایک دہشتگرد موقع پر ہی مارا گیا۔

منظور شہید چیک پوسٹ پر دہشتگردوں نے بھاری ہتھیاروں سے حملہ کیا ، تاہم پولیس کی بھرپور جوابی نے دہشتگردوں کے حملے کو پسپا کردیا ، جبکہ فائرنگ سے دہشتگردوں کا ایک ساتھی بھی مارا گیا۔

دہشتگردوں کے حملے کی اطلاع پر پولیس اور سیکورٹی فورسز کی بھاری نفری جائے وقوعہ پر پہنچ گئی اور دہشتگرد اپنی ساتھی کی لاش چھوڑ کر فرار ہو گئے۔ پولیس نے مزید نفری طلب کرکے علاقے کو گھیرے میں لے کر سرچ آپریشن شروع کردیا۔

مارے گئے حملہ آور کی لاش پوسٹ مارٹم کے لئے خیبر ٹیچنگ اسپتال منتقل کر دی گئی، پولیس کے مطابق حملہ آوروں کی تعداد 20 سے 25 کے درمیان تھی۔

متعلقہ تحاریر