نااہلی کیس؛ ہائیکورٹ کا ٹیریان وائٹ سے متعلق ریفرنسز ریکارڈ پر لانے کا حکم

اسلام آباد ہائی کورٹ کے لارجر بینچ نے مبینہ بیٹی ٹیریان وائٹ کو چھپانے پر نااہلی کےکیس میں پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان کی کی متفرق درخواست پر سماعت  کی،دوران سماعت عدالت نے ٹیریان وائٹ کے تمام ریفرنسز ریکارڈ پر لانے کا حکم دے دیا

اسلام آباد ہائیکورٹ پاکستان تحریک انصاف(پی ٹی آئی) کے چیئرمین عمران خان کی نااہلی سے متعلق  ٹیریان وائٹ کے تمام ریفرنسز ریکارڈ پر لانے کا حکم دے دیا ہے ۔

اسلام آباد ہائی کورٹ کے لارجر بینچ نے مبینہ بیٹی ٹیریان وائٹ کو چھپانے پر نااہلی کےکیس میں پی ٹی آئی کے چیئرمین عمران خان کی کی متفرق درخواست پر سماعت  کی ۔

یہ بھی پڑھیے

صحافیوں پر تشدد؛ رانا ثناا ور آئی جی ذمہ دار، پارلیمانی رپورٹرز کا اندراج مقدمہ کا مطالبہ

عمران خان کے وکیل سلمان اکرم راجا نے کہا کہ میرے موکل کے خلاف دائر درخواست قابل سماعت ہی نہیں، الیکشن کمیشن اس معاملے پر 2 مرتبہ فیصلہ کرچکاہے ۔

عمران خان کے وکیل سلمان اکرم نے کہا کہ درخواست میں استدعاکی گئی کہ میرے موکل کو این اے 95 سے نااہل کیا جائے جبکہ درخواست قابل سماعت ہی نہیں ہے۔

عدالت نے استفسار کیا کہ اگر عمران خان ممبر قومی اسمبلی نہیں تو پھر کیا صورت حال بنے گی؟ مدعی کے وکیل حامد علی شاہ نے کہا کہ عمران خان ابھی بھی  ایم این اے ہیں۔

عدالت نے کہا کہ کیا آپ نے دیکھا لاہور ہائیکورٹ نے ابھی فیصلہ دیا ہے الیکشن کمیشن نا اہل نہیں کرسکتا؟، اہلیت دیکھنے کا اختیار ہائیکورٹس اور عدالتوں کا ہے۔

چیف جسٹس نے سوال کیا کہ اگر تفصیلات غلط جمع کرائی گئی ہوں تو الیکشن ایکٹ کیا کہتا ہے؟جس وکیل الیکشن کمیشن نے کہا کہ تفصیلات غلط ہوں تو یہ کرپٹ پریکٹس میں آئےگا۔

یہ بھی پڑھیے

عمران خان کا جیل بھرو تحریک ختم کرنے کا اعلان

چیف جسٹس عامر فاروق  نےکہا کہ غلط تفصیلات پر الیکشن کمیشن نے 120 دن کے اندر ایکشن لینا ہوتا ہے، اگر الیکشن کمیشن نے ایکشن نہیں لیا تو پھر بس نہیں لیا۔

چیف جسٹس نے سوال کیا کہ الیکشن ایکٹ کے مطابق بچوں کی تفصیلات بتانا تو لازم نہیں ہیں نہ ؟ اس پر وکیل  نے کہا کہ  الیکشن ایکٹ کےمطابق یہ تفصیلات دینا لازم نہیں ہیں۔

الیکشن کمیشن کے وکیل نے کہا کہ اثاثوں کی فہرست میں بچوں کے اثاثوں کی تفصیلات بتانا لازم ہیں، اس اعتبار سے اِن ڈائریکٹ طورپربچوں کی تفصیلات بتانا لازم ہیں۔

عدالت نے وکیل درخواست گزار کو ٹریان وائٹ کیس سے متعلق تمام ریفرنسسز ریکارڈ پر لانے کا حکم دیتے ہوئے سماعت آئندہ بدھ تک ملتوی کردی ہے ۔

متعلقہ تحاریر