لکی مروت میں پولیس اسٹیشن  پر دہشتگردوں کا حملہ، اہلکار شہید، ایس ایچ او زخمی

نامعلوم افراد نے تھانہ ورگڑی کے عملے کی مدد کیلیے آنے والی پولیس کی گاڑی پر فائرنگ کردی، اہلکار سمیع اللہ چل بسا، ایڈیشنل ایس ایچ او حبیب اللہ شدید زخمی حالت میں اسپتال منتقل

لکی مروت میں تھانہ ورگاڑی پر نامعلوم دہشت گردوں  نے حملہ کردیا۔دہشت گردوں  نے مدد کیلیے بلائی گئی پولیس موبائل پر بھی فائرنگ کردی۔

افسوسناک واقعے میں ایک اہلکار شہید جبکہ ایڈیشنل ایس ایچ او زخمی ہوگیا۔

یہ بھی پڑھیے

پاک فوج کا جنوبی وزیرستان میں آپریشن،11دہشت گرد ہلاک

لکی مروت میں دہشتگردوں کا پولیس چیک پوسٹ پر حملہ، ایک اہلکار شہید ، ایک دہشتگرد ہلاک

پولیس ترجمان کے مطابق لکی مروت کے بیٹنی سب ڈویژن میں تھانہ ورگاڑی پولیس پر رات کے وقت نامعلوم مسلح افراد نے حملہ کیا۔ جس کی مدد کیلئے مقامی لوگ مسلح ہوکر نکل آئے اور نامعلوم حملہ آوروں پر فائرنگ شروع کردی ۔اس دوران قریبی تھانوں سے بھی پولیس نفری طلب کرلی گئی۔

دریں اثنا مروت کینال روڈ پر تھانہ ورگاڑی پولیس کی مدد کیلئے جانے والی تھانہ شادی خیل  پولیس کی کار پر فائرنگ کردی گئی جس کے نتیجے میں ایک پولیس اہلکار سمیع اللہ جاں بحق جبکہ ایڈیشنل ایس ایچ او حبیب اللہ شدید زخمی ہوگئے۔

ریسکیو 1122 نے زخمی پولیس افسر  کو علاج معالجے اور شہید اہلکار کی لاش کو   پوسٹ مارٹم کیلئے اسپتال منتقل کردیا۔ واضح رہے کہ نئے سال کے پہلے ہفتے میں لکی مروت میں پولیس پر حملے کا یہ دوسرا واقعہ ہے۔

اس سے قبل یکم جنوری کو دہشت گردوں نے  لکی مروت میں شہباز خیل پولیس چوکی پر حملہ کیا تھا۔ پولیس کے جوانوں نے بہادری سے حملہ ناکام بناتے ہوئے ایک دہشتگرد کو ہلاک کردیا تھا تاہم فائرنگ کے تبادلے میں پولیس کا ایک جوان بھی شہید ہوگیا تھا۔

 

متعلقہ تحاریر