لاہور کے بیوٹی پارلر کو دلہن کے نامکمل میک اپ پر جرمانہ

صارف عدالت نے دلہن کا میک اپ ادھورا چھوڑنے والے پارلر کے خلاف ڈگری جاری کرتے ہوئے 50 ہزار روپے جرمانہ کردیا ہے۔

لاہور میں دلہن کی شادی پڑ گٸی بیوٹی پارلر پر بھاری، پیسوں کے تناظر میں پارلر نے دلہن کا منہ دھو دیا، جس پر دلہن کی جانب سے صارف عدالت میں ہرجانے کے دعویٰ دائر کردیا گیا۔

تفصیلات کے مطابق صارف عدالت نے دلہن کا میک اپ ادھورا چھوڑنے والے پارلر کے خلاف ڈگری جاری کردیا۔ عدالت نے بیوٹی پارلر کو 50 ہزار ہرجانہ دینے کا حکم دے دیا۔

یہ بھی پڑھیے

امریکی اینکر کی بچی کوگودمیں اٹھاکر موسم کا حال بتانے کی وڈیو وائرل

تخلیقی رپورٹر کون؟چاند نواب یا امین حفیظ

صارف عدالت کے جج وسیم افضل میاں نے ڈاکٹر شازیہ کے دعوای پر سماعت کی، دعویٰ میں کہا گیا کہ قریبی عزیزہ دلہن کا نکاح کے لیے سیلون سے میک اپ کروایا، سیلون کی مالکن نے طے شدہ رقم سے زائد رقم مانگی، سیلون نے دلہن کا میک اپ ادھورا چھوڑ کر سیلون سے باہر نکال دیا۔

دلہن کی جانب سے عدالت میں دائر کیے گئے دعوے میں 10 لاکھ 10 ہزار کا مطالبہ کیا تھا تاہم عدالت نے دعوے کے برخلاف بیوٹی سیلون کو 50 ہزار جرمانے کی ڈگری جاری کر دی ہے۔

خاتون نے عدالت کے روبرو بتایا کہ بیوٹی پارلر کے ساتھ میک اپ کے لیے 10 ہزار روپے طے ہوئے تھے۔ انہوں نے بتایا کہ آدھی رقم ایڈوانس کے طور پر ادا کردی گئی تھی جبکہ بقایا رقم میک اپ شروع ہونے پر ادا کی جانی تھی۔

خاتون کے مطابق کچھ دیر بعد بیوٹی سیلون کی مالکہ نے بغیر کسی جواز کے میک اپ کی تکمیل روک دی اور 15 ہزار روپے کی اضافی رقم کا غیر قانونی طور پر مطالبہ کرنا شروع کر دیا۔”

شکایت کنندہ نے افسوس کا اظہار کرتے ہوئے کہا "اس نے اور اس کی کزن نے غیر قانونی مطالبے پر احتجاج کیا اور پارلر سے دستخط شدہ سلپ پیش کی اور کمٹمنٹ کے مطابق کام مکمل کرنے کی درخواست کی لیکن مدعا علیہ نے ایسا کرنے سے صاف انکار کر دیا اور انہیں باہر نکال دیا۔”

متاثرہ خاتون نے عدالت سے استدعا کی کہ بیوٹی پارلر کو ایک ملین جرمانہ ادا کرنے کا حکم دیا جائے۔ جس میں 8 لاکھ اس کی ساکھ کو نقصان پہنچانے ، ڈیڑھ لاکھ ذہنی اذیت پہنچانے ، 50 ہزار مالی نقصان کی مد میں اور 10 ہزار وہ رقم جو ہم نے بیوٹی پارلر کو ادا کی تھی۔

متعلقہ تحاریر