وفاق سے اربوں روپے وصولی کے باوجود سندھ حکومت سڑکوں کی مرمت کیلئے ورلڈ بینک کی محتاج

سندھ حکومت نے شہر قائد میں جگہ جگہ  بل بورڈز نصب کردیئے ہیں جس میں بتایا جا رہا ہے کہ صوبائی حکومت نے ورلڈ بینک کے تعاون سے سڑکوں کی استر کاری کا آغاز کردیا ہے جبکہ این ایف سی کی مد میں صوبائی حکومت کو  اربوں روپے فراہم کیے جاتے ہیں

وفاقی حکومت سے نیشنل فنانس کمیشن ایوارڈ(این ایف سی ) کی مد میں اربوں روپے وصول کرنے والی سندھ حکومت کراچی کی سڑکوں کی مرمت کے لیے ورلڈ بینک کی محتاج ہوگئی ۔

حکومت سندھ نے کراچی کی سڑکوں کی استر کاری کیلئے بھی ورلڈ بینک کے آگے ہاتھ پھیلا لیا ہے جبکہ صوبائی حکومت این ایف سی کی مد میں اربوں روپے  وفاق سے وصول کرتی ہے۔

یہ بھی پڑھیے

سندھ اسمبلی میں ایک ہی خاندان کے 5افراد کو گریڈ 20میں بھرتی کیے جانے کا انکشاف

سندھ حکومت نے شہر قائد میں جگہ جگہ بل بورڈز نصب کردیئے ہیں جس میں بتایا جارہا ہے کہ صوبائی حکومت نے ورلڈ بینک کے تعاون سے سڑکوں کی استر کاری کا آغاز کردیا ہے ۔

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا ہے کہ کراچی میں سڑکوں کی مرمت کا کام شروع کردیا گیا ہے۔ سڑکوں کی استر کاری کیلئے ورلڈ بینک نے امداد بھی فراہم کردی ہے ۔

وزیراعلیٰ  سندھ کے مطابق ورلڈ بینک سے بحالی/مرمت کے کاموں کے 18 ملین ڈالر کے معاہدوں پر دستخط ہو ئے ہیں جس میں 9ملین ڈالر بحالی کے کاموں کیلئے خرچ کیے جائیں گے ۔

وزیراعلیٰ سندھ سید مراد علی شاہ نے کہا کہ ورلڈ بینک کی مدد سے کلک پروجیکٹ (Click Project) کے تحت 268 سڑکوں کی استر کاری کا کام مکمل کیا جائےگا  ۔

ورلڈ بینک نے گزشتہ سال نومبر میں حکومت سندھ کو 6 ارب روپے کراچی کی سڑکوں کی استر کاری کیلئے فراہم کیے ہیں جبکہ واٹر اینڈ سیوریج  کے لیے بھی فنڈ فراہم کیے تھے ۔

متعلقہ تحاریر