سپریم کورٹ انتخابی احکامات کی خلاف ورزی کرنے والے وزراء کو 5 سال کےلیے نااہل قرار دے، اعتزاز احسن

پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما نے سپریم کورٹ سے انتخابی احکامات کی خلاف ورزی کرنے والے وزرا کو 5 سال کے لیے نااہل قرار دینے کا مطالبہ کیا ہے۔

پاکستان پیپلز پارٹی کے سینئر رہنما اور ممتاز قانون دان اعتزاز احسن نے پاکستان میں قانون کی حکمرانی اور آئین کو برقرار رکھنے کی اہمیت پر زور دیتے ہوئے سپریم کورٹ سے پرزور اپیل کی ہے کہ وہ اپنے احکامات کی خلاف ورزی کرنے والوں کے خلاف کارروائی کرے اور آئندہ انتخابات کے شیڈول کے انعقاد کو یقینی بنائے۔

منگل کے روز لاہور ہائی کورٹ کے باہر میڈیا سے گفتگو کرتے ہوئے اعتزاز احسن نے نظریہ ضرورت کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ اس نے پاکستان کو برباد کر کے رکھ دیا ہے۔

یہ بھی پڑھیے 

سیاستدانوں کا فرض ہے کہ وہ عوام کو طاقتور بنائیں، سید خورشید شاہ

پنجاب اور کےپی میں انتخابات وقت پر نہ ہوئے تو عوامی انقلاب آئے گا، فواد چوہدری

انہوں نے اس بات پر روشنی ڈالی کہ پاکستان نے چار فوجی بغاوتیں دیکھی ہیں، اور آئین کو متعدد بار مفلوج کیا گیا، جس کے نتیجے میں ملک کے جمہوری اداروں بڑے پیمانے پر اور دیرپا نقصانات پہنچے ہیں۔

ملک میں جاری سیاسی صورتحال پر تبصرہ کرتے ہوئے اعتزاز احسن کا کہنا تھا کہ اپوزیشن لیڈر عمران خان کے خلاف حالیہ 140 مقدمات کا فیصلہ ان کی مقبولیت میں اضافہ ہی کرے گا۔ انہوں نے بیوروکریسی اور قوم پر زور دیا کہ وہ نظم و ضبط اور قانون کی حکمرانی پر عمل کریں۔

رہنما پیپلز پارٹی کا کہنا تھا کہ کوئی بھی سیاسی پارٹی سپریم کورٹ کے احکامات کی خلاف ورزی نہ کرے، عدالتی احکامات کی خلاف ورزی کرنے والوں کو سزا ملنی چاہیے۔

اعتزاز احسن نے سپریم کورٹ سے وزیر قانون، وزیر داخلہ اور وزیر خزانہ کو طلب کرکے نااہل قرار دینے کا مطالبہ کردیا۔ انہوں نے کہا کہ آئین میں لکھا ہے کہ صوبائی اسمبلی کی تحلیل کے 90 دن کے اندر انتخابات کرائے جائیں۔ سپریم کورٹ قانون اور آئین کی پاسداری کررہی ہے۔ انتخابات نہ ہونے کی صورت میں وزیراعظم، وزیر قانون اعظم نذیر تارڑ اور رانا ثناء اللہ ذمہ دار ہوں گے۔

آئندہ انتخابات کے حوالے سے اعتزاز احسن نے رانا ثناء اللہ کے حالیہ بیان کو تنقید کا نشانہ بناتے ہوئے کہا کہ حکومت 14 مئی کو انتخابات نہیں ہونے دے گی جب کہ سپریم کورٹ پہلے ہی انتخابات اسی تاریخ کو کرانے کا حکم دے چکی ہے۔ انہوں نے سپریم کورٹ سے مطالبہ کیا کہ وہ وزیراعظم، رانا ثناء اللہ، اعظم نذیر تارڑ اور الیکشن کمیشن کو طلب کرکے ان کے بیانات کی وضاحت طلب کریں۔ اور اگر انہوں نے سپریم کورٹ کے حکم کی خلاف ورزی کی ہے تو انہیں سزا دی جائے اور نااہل قرار دیا جائے۔

متعلقہ تحاریر