اکتوبر میں اسلام آباد آرہے ہیں رانا ثناء اللہ تیاری پکڑ لیں، عمران خان

چیئرمین تحریک انصاف کا کہنا ہے اب ہم پوری تیاری کے ساتھ آئیں گے ، مجرم اور قاتل رانا ثناء اللہ اور شہباز شریف کے خلاف پوری پلاننگ کرلی ہے۔

سابق وزیراعظم اور چیئرمین تحریک انصاف عمران خان نے کہا ہے کہ بھارت اور بنگلادیش ہم سے آگے نکل گئے ہم 40 سال سے غیرملکی امداد پر گزارا کررہے ہیں، یہ لوگ جب بھی اقتدار میں آتے ہیں ملکی قرضے بڑھ جاتے ہیں۔

خیبرپختونخوا کے ضلع کرک میں پاکستان تحریک انصاف کے جلسے سے خطاب کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا نواز شریف اور شہباز شریف کے بچے باہر بھاگے ہوئے ہیں ، شہباز شریف کی آڈیو ٹیپ سامنے آئی ہے ، تھوڑی دیر کے لیے صبر کرنا پڑتا ہے سچ سامنے آجاتا ہے ، آڈیو لیک میں تین چیزیں سامنے آئی ہیں۔ مریم نواز کی سب سے بڑی خوبی یہ ہے کہ سچ نہیں بولتی ہیں۔ اس کی لندن تو چھوڑ پاکستان میں بھی کوئی پراپرٹی نہیں تھی۔

یہ بھی پڑھیے

اگلے انتخابات کے نتائج تک جنرل باجوہ کو آرمی رہنا چاہیے، عمران خان

ہم پوری تیاری سے اسلام آباد آئیں گے ، رانا ثناء کو چھپنے کی جگہ نہیں ملے گی، عمران خان

عمران خان کا کہنا تھا کہ بھارت نے بین الاقوامی قانون توڑا اور کشمیر کی خصوصی حیثیت کو ختم کردیا ، ہماری حکومت نے بھارت کے ساتھ تجارت بند کردی ، اور اب مریم نواز اپنے داماد کے پاور پلانٹ کے لیے بھارت سے مشینری امپورٹ کروانا چاہتی ہے ، مریم نواز سے سچ نہیں بولا جاتا۔ مریم نواز موجودہ دور حکومت میں ناجائز کام کرانا چاہ رہی ہے۔

چیئرمین تحریک انصاف کا کہنا تھا یہ لوگ جب بھی اقتدار میں آتے ہیں پیسے بنانے کے لیے آتے ہیں ، جب بھی اقتدار میں آتے ہیں ملکی قرضے بڑھ جاتے ہیں ، اقتدار میں آکر ذاتی فائدے لینا کرپشن ہوتا ہے ، 40 سال سے پاکستان امداد لے کر گزارا کررہا ہے۔

نواز شریف پر تنقید کرتے ہوئے عمران خان کا کہنا تھا نواز شریف کے بیٹے لندن کے مہنگے ترین علاقے میں رہتے ہیں ، یہ وہ علاقے ہیں جہاں یوکے کا وزیراعظم بھی رہنے کا تصور نہیں کرسکتا، اسحاق ڈار کے بیٹے بھی باہر رہتے ہیں۔

پی ٹی آئی کے سربراہ کا کہنا تھا نواز شریف کے بیٹوں کے گھروں کی قیمتیں اربوں روپے ہے ، حسن شریف جس گھر میں رہتا ہے اس کی قیمت 10 ارب روپے ہے، حسن شریف سے پوچھا جاتا ہے کہ اتنا پیسہ کہاں سے آیا تو جواب میں کہتے ہیں ہم پاکستانی شہری نہیں اس لیے جواب دینے کے پابند بھی نہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ جو لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ میں چوروں کی غلامی قبول کرلوں گا بہت بڑی غلط فہمی میں ہیں۔ میری قوم نکلنے کے لیے تیار بیٹھی ہے۔ 25 مئی کو ہم پرامن طور پر احتجاج کے لیے نکلے تھے تو انہوں نے ہم پر ظلم کی انتہا کردی، اب میں حقیقی آزادی کی تحریک کے لیے پورے پاکستان میں جارہا ہوں۔

ان کا کہنا تھا آزاد عدلیہ کی خاطر جنرل پرویز مشرف کے دور میں جیل کاٹی۔ عمران خان کا کہنا ہے حقیقی آزادی کی تحریک آخری اور فیصلہ کن ہو گی۔

متعلقہ تحاریر