انڈین ارب پتی نے شطرنج کے چیمپیئن کو دھوکے سے شکست دی

سابق عالمی چیمپیئن وشوناتھن آنند چندہ مہم کے سلسلے میں ایک وقت میں 9 شخصیات کے ساتھ آن لائن شطرنج کھیل رہے تھے۔

انڈیا کے سابق شطرنج کے عالمی چیمپیئن وشوناتھن آنند کو آن لائن مقابلے میں ارب پتی انڈین نوجوان نکھل کماتھ نے دھوکے سے شکست دے دی ہے۔ سابق عالمی چیمپیئن وشوناتھن آنند کرونا کی وباء کے خلاف جاری چندہ مہم کے سلسلے میں ایک وقت میں آن لائن 9 شخصیات کے ساتھ شطرنج کھیل رہے تھے۔

وشوناتھن آنند کو آن لائن شکست دینے والے ارب پتی نوجوان نے اعتراف کیا ہے کہ انہوں نے گیم چیک میٹ کووڈ میں چیمپیئن کو شکست دینے کے لیے بیرونی مدد حاصل کی تھی۔

یہ بھی پڑھیے

رونالڈو کا مداحوں کو پانی پینے کا مشورہ کوکا کولا کو لے ڈوبا

نکھل کماتھ نے اعلیٰ درجے کے کھیل میں 99 فیصد درست چالیں چلیں جو کسی بھی ناتجربہ کار کھلاڑی کے لیے تقریباً ناممکن ہوتا ہے۔ بعدازاں نوجوان نے وشوناتھن آنند سے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر معذرت کی۔

انہوں نے کہا ہے کہ یہ مضحکہ خیز ہے کہ اگر کچھ لوگ یہ سمجھتے ہیں کہ میں نے وشوناتھن آنند کو شکست دے دی ہے۔ یہ ایسے ہی ہے جیسے میں نے 100 میٹر کی دوڑ میں یوسین بولٹ کو ہرا دیا ہے۔ مجھے کھیل کے دوران کمپیوٹر اور وشوناتھن آنند کی مدد حاصل تھی۔ مجھے کھیل کے دوران بہت کچھ سیکھنے کو ملا۔ یہ سب تفریح اور مدد کے لیے تھا تاہم میری معذرت کو قبول کیا جائے۔

ارب پتی تاجر نکھل کماتھ کا کہنا ہے کہ وشوناتھن آنند کو بھی پتہ تھا کہ میں بیرونی مدد لے رہا ہوں اور چیمپیئن نے بھی کسی نہ کسی صورت میں میری مدد کی تھی۔

کھیل کے دوران منصفانہ پالیسی کی خلاف ورزی کرنے پر شطرنج کی بین الاقوامی ویب سائٹ چیس ڈاٹ کام نے 34 سالہ نکھل کماتھ کا اکاؤنٹ بند کردیا ہے۔

دوسری جانب وشوناتھن آنند کی اہلیہ اور مینیجر کا کہنا ہے کہ نکھل کماتھ جھوٹ بول رہے ہیں کیونکہ ہم نے کبھی بھی وشوناتھن آنند کے پورے کیریئر کے دوران ایسی بات نہیں سنی کہ انہوں نے کھیل کے دوران کسی کی مدد کی ہو۔

انہوں نے کہا ہے کہ نکھل کماتھ ایک جھوٹ پر پردہ ڈالنے کے لیے مزید جھوٹ بول رہے ہیں۔ اگر وہ کمپیوٹر اور اپنے دوستوں سے مدد لے رہے تھے تو الگ بات ہے۔ لیکن وہ اس مدد کے لیے وشوناتھن آنند کا نام استعمال نہ کریں۔

وشوناتھن آنند کی اہلیہ کا کہنا ہے کہ نکھل کماتھ نے سوشل میڈیا پر معذرت کرنے سے قبل ان سے رابطہ کیا تھا اور کہا تھا کہ وہ اس تنازعے میں آنند کا نام استعمال نہیں کریں گے۔

گرینڈ ماسٹر پراوین تھپسے نے کہا ہے کہ وشوناتھن آنند حکمت عملی، درستگی اور حساب کتاب کے ماہر ہیں۔ یہاں تک کہ عالمی چیمپیئن میگنس کارلسن بھی انہیں ہرا نہیں پائے تھے۔ یہ واضح ہے کہ نکھل کماتھ کو بیرونی مدد ضرور حاصل تھی۔

متعلقہ تحاریر