کیا پاکستان اولمپکس میں کوئی تمغہ جیت پائے گا؟

پاکستانی دستے میں شامل 10میں سے 5 کھلاڑی میڈل لیے بغیر ایونٹ سے باہر ہوگئے ہیں۔

ٹوکیو اولمپکس میں پاکستان کی جانب سے 10 ایتھلیٹس نے حصہ لیا جن میں سے اب تک 5 آؤٹ ہوچکے ہیں اور 5 مقابلے میں باقی رہ گئے ہیں۔ عوام کو اب ایک ہی سوال ستائے جارہا ہے کہ کیا پاکستانی ایتھلیٹس اس مرتبہ اولمپکس میں ملک کو کوئی تمغہ جیتواسکیں گے؟

ٹوکیو اولمپکس میں پاکستان کے میڈل جیتنے کے امکانات روز بروز کم ہوتے جارہے ہیں۔ پاکستانی دستے میں شامل 10 میں سے  5 کھلاڑی میڈل لیے بغیر ایونٹ سے باہر ہوگئے۔ اولمپکس میں سب سے پہلے پاکستانی شوٹر گلفام جوزف باہر ہوئے۔ انہوں نے نے 10 میٹر ایئر پسٹل مقابلے میں حصہ لیا تھا۔

Geo

یہ بھی پڑھیے

پاکستانی اولمپئینز کی حوصلہ افزائی سے زیادہ حوصلہ شکنی

ٹوکیو اولمپکس میں پاکستانی ویٹ لفٹر طلحہٰ طالب کے علاوہ کوئی کھلاڑی خاطرخواہ کاکردگی کا مظاہرہ نہیں کرسکا۔ طلحہٰ طالب سڑسٹھ کلو گرام کیٹیگری میں پانچویں نمبرپر آئے تھے اور صرف دو کلو کے فرق سے کانسی کا تمغہ حاصل کرنے سے محروم رہے۔

POA

بیڈمنٹن میں پہلی مرتبہ پاکستان کی نمائندگی کرنے والی ماحور شہزاد پہلے ہی مرحلے میں ناکامی سے دوچار ہوگئیں۔ پہلے میچ میں جاپانی اور دوسرے میں میچ برطانوی حریف نے انہیں شکست سے دوچار کیا۔

POA

پاکستانی تیراک حسیب طارق نے 100 میٹر فری اسٹائل کے ہیٹ ٹو میں حصہ لیا اور 72سوئمرز میں  62 ویں  نمبر پر آئے۔

Geo

جوڈو میں میڈیل کی آس شاہ حسین کی مصری حریف کے ہاتھوں شکست سے دم توڑ گئی۔

Geo

سوشل میڈیا صارفین کو اب ایک ہی سوال ستائے جارہا ہے کہ کیا پاکستانی ایتھلیٹس اس مرتبہ اولمپکس میں ملک کو کوئی تمغہ جیتواسکیں گے؟

پاکستانی قوم نے اولمپکس میں باقی رہ جانے والے 5 کھلاڑیوں سے میڈل کی امید باندھ رکھی ہے۔ سوئمر بسمہ خان  ہفتے کو 50 میٹر فری اسٹائل مین ایکشن میں نظر آئیں گی۔ یکم اگست کو شوٹر خلیل اختر اور غلام بشیر 25 میٹر ریپڈ فائر پسٹل میں ایکشن میں ہوں گے۔ نجمہ پروین 2 اگست کو 200 میٹر ریس میں حصہ لیں گی جبکہ 4 اگست کو ارشد ندیم جیولن تھرو میں ایکشن مین نظر آئیں گے۔

واضح رہے کہ ویٹ لفٹنگ میں شاندار کارکردگی کا مظاہرہ کرنے والے طلحہٰ طالب وطن واپس پہنچ گئے ہیں۔ لاہور ایئرپورٹ پر پاکستان ویٹ لفٹنگ فیڈریشن  کے عہدیداران اور کھلاڑیوں نے ان کا استقبال کیا۔

Facebook Comments Box