شاہ نواز دہانی اور زاہد محمود کب کھیلیں گے؟

سندھ سے تعلق رکھنے والے کھلاڑیوں کو میچ نہ کھلانے پر شائقین افسوس کا اظہار کررہے ہیں۔

ویسٹ انڈیز کے خلاف دوسرے ٹیسٹ میچ میں پاکستان نے اپنی پہلی اننگ 302 رنز بنا کر ڈکلیئر کردی۔ قومی ٹیم کے فواد عالم سنچری بناگئے۔ اسپورٹس جرنلسٹ مرزا اقبال بیگ نے دوسرے ٹیسٹ میں بھی سندھ سے تعلق رکھنے والے کرکٹرز شاہنواز دہانی اور زاہد محمود کو ٹیم میں شامل نہ کرنے پر افسوس کا اظہار کیا ہے۔

پاکستان اور ویسٹ انڈیز کے درمیان کھیلے جانے والے دوسرے ٹیسٹ میچ کی پہلی اننگ میں قومی ٹیم نے 9 وکٹس کے نقصان پر 302 رنز بنائے تو کپتان بابر اعظم نے اننگ ڈکلیئر کردی۔ قومی کرکٹ ٹیم کے کھلاڑی فواد عالم ایک مرتبہ پھر عمدہ کارکردگی کا مظاہرہ کرتے ہوئے 124 رنز بناکر ناٹ آؤٹ رہے۔ کپتان بابر اعظم نے 75، محمد رضوان نے 31 اور فہیم اشرف نے 26 رنز بنائے۔

یہ بھی پڑھیے

آئی سی سی کی کرکٹ کو اولمپکس میں شامل کروانے کی کوششیں

دوسرے ٹیسٹ میچ میں عمدہ کارکردگی پر جہاں شائقین کرکٹ فواد عالم کو سراہا رہے ہیں وہیں کچھ شائقین اور اسپورٹس جرنلسٹ ٹیم میں سندھ سے تعلق رکھنے والے پلیئرز شاہنواز دہانی اور زاہد محمود کو موقع نہ دینے پر افسوس کا اظہار کرتے دکھائی دے رہے ہیں۔

صحافی اور تجزیہ نگار مرزا اقبال بیگ نے سماجی رابطوں کی ویب سائٹ ٹوئٹر پر لکھا کہ کیا زاہد محمود اور شاہنواز دہانی کو ہر دورے پر محض آب و ہوا کی تبدیلی کے لیے لے جایا جاتا ہے؟ تمام نئے کھلاڑی ساجد خان، اعظم خان اور سعود شکیل قومی ٹیم میں کھیل گئے لیکن سندھ کے کھلاڑیوں کو موقع نہیں دیا جارہا۔

شائقین کرکٹ کا کہنا ہے کہ فواد عالم کو 11 برس کے بعد ٹیم میں شامل کیا گیا تو انہوں نے سلیکٹرز کو مایوس نہیں کیا۔ وہ بتدریج شاندار کارکردگی کی بدولت ٹیم میں اپنی پوزیشن مضبوط کررہے ہیں۔ شائقین نے سوال اٹھایا کہ جس طرح فواد عالم کو 11 سال ٹیم سے باہر رکھا گیا اسی طرح کیا اب شاہنواز دہانی اور زاہد محمود کے ساتھ بھی ایسا ہی ہوگا؟ پاکستان سپر لیگ میں ایمرجنگ پلیئر کے طور پر کھیلنے والے شاہ نواز دہانی پورے ٹورنامنٹ میں سب سے زیادہ وکٹ لینے والے کھلاڑی بنے اور ملتان سلطانز کو ٹائٹل جتوانے میں اہم کردار ادا کیا لیکن اس کے باوجود انہیں قومی ٹیم میں موقع نہ دینا مایوس کن ہے۔

دوسری طرف سینئر کھلاڑیوں کی جانب سے فواد عالم کی کارکردگی کو سراہا جارہا ہے۔ ویسٹ انڈیز کے سابق ٹیسٹ پلیئر سیموئل بدری نے لکھا کہ اپنے ڈیبیو میں سینچری اسکور کرنے والے فواد عالم کی 11 سال کے بعد کرکٹ میں واپسی اور پھر 8 ٹیسٹ میچز میں 5 سینچریز ان کی کرکٹ سے لگن کا نتیجہ ہے۔

Facebook Comments Box