پی سی بی کی نئی اور پرانی انتظامیہ کی بچگانہ حرکتوں نے پاکستان کرکٹ کو مذاق بنادیا

رمیز راجہ نے پاکستان جونیئر لیگ بند کرنے پر نئی انتظامیہ کو جوکر قرار دیدیا۔سابق چیئرمین پی سی بی کے دفتر سے اپنا سامان لے جانے سے انکاری، شکیل شیخ کو رمیز راجہ کا سامان نیلام کرکے رقم شوکت خانم کو عطیہ کرنے کی تجوز پسند آگئی

پاکستان کرکٹ بورڈ ( پی سی بی) کی نئی اور پرانی انتظامیہ کی بچگانہ حرکتوں نےپاکستان کرکٹ کو مذاق بنادیا۔رمیز راجہ  نے پی سی بی کی  نئی انتظامیہ کو جوکر زقرار دے دیا۔ دوسری جانب نئی انتظامیہ بھی   کھلنڈرے نوجوانوں جیسی حرکتیں کرنے میں مصروف ہے۔

رمیز راجہ نے اپنے دفتر میں چھوڑا ہوا سامان وصول کرنے سے انکار کردیا ۔ نئی منیجنگ کمیٹی کے رکن نے سابق چیئر مین کے سامان کی نیلامی کی باتیں شروع کردیں۔

یہ بھی پڑھیے

سرفراز احمد نے پذیرائی سے محروم قومی ہیرو رمیز ابراہیم کے حق میں آواز اٹھادی

کراچی میں کوہلی کی تصویر وال شرٹ دیکھ کر بھارتی صحافی کا دلچسپ سوال

پی سی بی منیجنگ کمیٹی کے رکن شکیل شیخ نے رمیز راجہ کے دفترمیں موجود سامان کی تصویر اپنے ٹوئٹر ہینڈل پر شیئر کرتے ہوئے لکھاکہ”ریمبو (رمیز راجہ) اپنی چھوڑی ہوئی  اشیاوصول نہ کرنے   کیلیے بہانے بنارہے ہیں، ان اشیا کو لوٹانے کی کئی کوششیں کی گئیں ہیں  ، لیکن وہ ایسا کیوں کررہے ہیں ؟کیونکہ وہ اس معاملے کو زندہ رکھنا چاہتے ہیں، کتنا افسو س کی بات ہے“۔

سینئر صحافی مرتضیٰ سولنگی نے  شکیل شیخ کے ٹوئٹ پر تبصرہ کرتے ہوئے شرارتی تجویز پیش کردی۔انہوں نے لکھاکہ میرے پاس ایک تجویز ہے،اگر وہ  ایک مقررہ وقت تک ان اشیا کو نہیں اٹھاتے تو انہیں نیلام کریں اور رقم شوکت خانم میموریل اسپتال  کو بھیج دیں۔بلاشبہ رمیز ایک مشہور شخصیت ہیں، چلیں دیکھتے ہیں   سب سے زیادہ بولی کیا لگتی  ہے۔

شکیل شیخ نے بھی استہزائیہ انداز اپناتے ہوئے  مرتضیٰ سولنگی کی تجویز کو پسند کیا اور لکھا کہ یقیناً اس پر سنجیدگی سے غور کیا جانا چاہیے۔

دوسری جانب سابق چیئرمین پی سی بی رمیز پاکستان جونیئر لیگ کی دستخط شدہ یادداشت سامنے لے آئے۔انہوں نے لکھاکہ یہ معاہدہ اس لیگ کی پائیداری اور بورڈ کیلیے منافع بخش ہونے کی تصدیق  کرتا ہے اور سب سے بڑھ کریہ کہ اس سے نوجوان کھلاڑیوں کو ترقی ملتی۔ فرنچائزز کو 13 جنوری تک حتمی شکل دی جانی تھی لیکن  ان نئے جوکروں پر افسوس ہے۔

متعلقہ تحاریر