پاکستان میں براڈ بینڈ صارفین کی تعداد 10 کروڑ

2012 میں براڈ بینڈ صارفین کی تعداد 20 لاکھ سے بھی کم تھی لیکن 2014 میں صارفین کی تعداد 1 کروڑ 60 لاکھ تک پہنچ چکی تھی۔

ملک میں ٹیلی کمیونیکیشن کے نگراں ادارے پاکستان ٹیلی کمیونیکیشن اتھارٹی (پی ٹی اے) نے جمعے کے روز بتایا ہے کہ ملک میں براڈ بینڈ صارفین کی تعداد 10 کروڑ تک پہنچ چکی ہے۔

پی ٹی اے کے مطابق سال 2012 میں پاکستان میں براڈ بینڈ صارفین کی تعداد 20 لاکھ سے بھی کم تھی لیکن ملک میں تھری جی کے آنے کے بعد 2014 میں براڈ بینڈ صارفین کی تعداد 1 کروڑ 60 لاکھ تک پہنچ چکی تھی۔

پی ٹی اے کا کہنا ہے کہ اس وقت ملک کی تقریباً 87 فیصد آبادی کو خطے میں انتہائی کم شرح پر براڈ بینڈ کی خدمات تک رسائی حاصل ہے۔

یہ بھی پڑھیے

ناکام معاشی پالیسی اور سیاسی شکست عبدالحفیظ شیخ کو لے ڈوبی

پی ٹی اے غیر قانونی سگنل بوسٹرز لگانے والوں کے خلاف کارروائی کررہی ہے جس کی وجہ سے موبائل سروسز میں خلل پیدا ہوتا ہے۔ پی ٹی اے ایکٹ 1996 کے مطابق غیر قانونی سگنل بوسٹرز کا استعمال ممنوع ہے جبکہ اس کی سزا 3 سال اور 10 لاکھ روپے جرمانہ ہے۔

دسمبر 2020 میں پاکستان میں تھری جی اور فور جی کے صارفین کی تعداد 9 کروڑ 5 لاکھ تھی جبکہ نومبر 2020 میں صارفین کی تعد 8 کروڑ 88 لاکھ تھی۔ اسی دوران میں موبائل صارفین کی تعداد 175 اعشاریہ 62 ملین تک پہنچ گئی تھی جبکہ نومبر میں موبائل صارفین کی تعداد 173 اعشاریہ 67  ملین تھی۔

Facebook Comments Box