گوگل، مائیکروسافٹ اور ایپل انٹرنیٹ براؤزنگ کی بہتری کے لیے کوشاں

انٹرنیٹ براؤزنگ کو مزید بہتر بنانے کے لیے گوگل، ایپل اور مائیکروسافٹ مشترکہ طور پر کام کررہی ہیں۔

دنیا کی تین بڑی ٹیکنالوجی کمپنیاں مائیکروسافٹ، گوگل اور ایپل انٹرنیٹ براؤزنگ کو بہتر بنانے کے لیے ایک ساتھ مل کر کام کریں گی۔

یہ تین بڑی کمپنیاں ایک دوسرے کی روایتی حریف سمجھی جاتی ہیں اور اپنے صارفین کو بہترین خدمات فراہم کرنے کے لیے ہمہ وقت کوشاں رہتی ہیں۔ غیر ملکی میڈیا کے مطابق گوگل کے کرومبراؤزر، ایپل کے سفاری، مائیکروسافٹ کے ایج اور موزیلا فائر فاکس کی ٹیمیں اپنے براؤزر میں موجود ایکسٹینشنز میں بہتری کے لیے کام کررہی ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

فیس بک کی نیاٹیل کے ساتھ پاکستان میں پہلی سرمایہ کاری

رپورٹ کے مطابق ان کمپنیوں نے ورلڈ وائڈ ویب کنسورشیم میں ایک ساتھ آنے کا اعلان کیا ہے۔ اپنے مقصد کو پورا کرنے کے لیے کمپنیوں نے ایک لائن فورم بھی تیار کیا ہے جس کا نام ویب ایکسٹینشنز کمیونٹی گروپ (ڈبلیو ای سی جی) ہے۔ اس فورم میں انجینئرز کو محفوظ ایکسٹینسشز بنانے کے لیے پلیٹ فارم مہیا کیا گیا ہے۔

ڈبلیو ای سی جی میں بننے والی ایکسٹینشنز کو براؤزر میں موجود انفرادی اسٹور سے ڈاؤن لوڈ کیا جاسکے گا۔ اس مشترکہ کاوش کا مقصد ایکسٹینشنز کے ذریعے صارفین کی براؤزنگ کو محفوظ بنانا ہے۔

ادھر دنیا کے ترقی یافتہ ممالک کے گروپ (جی 7) نے گوگل ،ایمازون اور فیس بک سمیت دیگر ملٹی نیشنل کمپنیوں پر ٹیکس لگانے کا فیصلہ کرلیا ہے۔ جی 7 ممالک میں جرمنی، برطانیہ، فرانس، امریکا، کینیڈا، اٹلی اور جاپان شامل ہیں۔ جی 7 ممالک نے کمپنیوں پر 15 فیصد ٹیکس لگانے کا فیصلہ کیا ہے جس کی وجہ سے اِن ممالک کو اربوں ڈالرز کا فائدہ متوقع ہے۔

متعلقہ تحاریر