پسوڑی سے مشہور ہونے والی گلوکارہ  شے گل  کا تعلق کس مذہب سے ہے؟

بھارتی سکھ گلوکار سدھو موسے والا کے قتل پر دعائیہ کلمات ادا کرنے پر سوشل میڈیا صارفین نے گلوکارہ کوتنقید کا نشانہ بنایا تھا

کوک اسٹوڈیو سیزن 14 کے مقبول ترین گیت پسوڑی سے شہرت حاصل کرنے والی گلوکارہ شے گل نے اپنے مذہب کے حوالے سے بڑا انکشاف کیا ہے۔

گزشتہ دنوں بھارتی پنجاب میں قتل کیے جانے والے گلوکار سدھوموسےو الا  کیلیے دعائیہ کلمات لکھنے پر  انسٹاگرام صارفین نے گلوکارہ شے گل کو   تنقید کا نشانہ بنایا تھا۔

یہ بھی پڑھیے

ڈچ گلوکارہ نے پسوڑی کا انگریزی ورژن گاکر دھوم مچادی

بھارتی ریئلٹی اسٹار شہناز گل بھی” پسوڑی “کے عشق میں مبتلا

شے گِل نے سدھو موسے والا کیلئے دعا کرتے ہوئے ان کے لواحقین کے لیے صبر کی دعا کی تھی، تاہم لوگ ان کی بات پر ناخوش دکھائی دیے اور انہیں تنقید کا نشانہ بنا ڈالا۔صارفین کا کہنا تھا کہ وہ(شے گل) ایک مسلمان ہیں اور وہ غیر مسلم افراد کے لیے دعا نہیں کر سکتیں۔

شے گل نے انسٹاگرام صارفین  کی جانب سے ارسال کردہ تنقیدی پیغامات  کے اسکرین شارٹس اپنی انسٹاگرام اسٹوریز پر لگائے اور بعدازاں اپنی مذہب کے حوالے سے ضروری وضاحت بھی پیش کردی۔

گلوکارہ شائے گل  نے اپنی انسٹاگرام اسٹوری میں میں واضح کیا کہ وہ مسلمان نہیں ہیں اور ایک مسیحی خاندان سے تعلق رکھتی ہیں اور وہ دوسرے مذاہب سے تعلق رکھنے والے افراد کے لیے دعا کر سکتی ہیں۔

گلوکارہ نے مزید کہا کہ وہ اپنی مذہبی شناخت ظاہر نہیں کرنا چاہتی تھیں مگر چوں کہ انہیں زیادہ تر نامناسب پیغامات موصول ہو رہے تھے، اس لیے انہوں نے ایسا کیا۔

شے گِل نے تنقید کرنے والے بعض افراد کو بلاک بھی کیا اور بتایا کہ اگر ان کے ساتھ کوئی بھی بدتمیزی کرے گا تو وہ انہیں بلاک کردیں گی ۔

متعلقہ تحاریر