امریکا میں56 سالہ خاتون نینسی اپنے بیٹے جیف کے پانچویں بچے کی ماں بن گئیں

امریکی ریاست یوٹاہ کی 56 سالہ خاتون نینسی ہاک رضاکارانہ طورپر اپنے بیٹے جیف کے پانچویں بچے کو نومبر میں جنم دیں گی، چیف کی اہلیہ کیمریا  کی بیماری کے باعث جیف کی والدہ نے رضا کارانہ طور پر سرو گیٹ  بننے کی پیشکش کی، نینسی ہاک  آئی وی ایف (IVF)سے گزرنے کے بعد فوراًحاملہ ہوگئیں

امریکی ریاست یوٹاہ کی56 سالہ خاتون نینسی ہاک رضاکارانہ طور پر اپنے بیٹے کے پانچویں بچے کو جنم دینے والی ہیں۔ جیف کی اہلیہ بیماری کی وجہ سے مزید بچوں کو جنم دینے سے قاصر تھیں ۔

یوٹاہ سے تعلق رکھنے والی 56 سالہ خاتون نینسی ہاک نے رضاکارانہ طور پر اپنے بیٹے جیف کے پانچویں بچے کو جنم دیں گی جب اس کی بیوی کیمریا بچے کو جنم دینے سے قاصر ہوگئیں تھیں۔

یہ بھی پڑھیے

کیا عالیہ بھٹ واقعی جڑواں بچوں کو جنم  دینگی؟رنبیر کا سچ بتانے سے انکار

فاکس کارپوریشن کی معروف ویب سائٹ ٹی ایم زیڈ نے اپنی ایک رپورٹ میں بتایا کہ پہاڑی ریاست یوٹاہ کی 56 سالہ نینسی ہاک اپنے بیٹے جیف کے پانچویں بچے کو جنم دیں گیں ۔

ٹی ایم زیڈ کی رپورٹ کےمطابق جیف کے پہلے ہی4 بچے ہیں تاہم وہ ایک مزید بچے کے متلاشی تھے جبکہ ان کی بیوی مزید بچوں کو جنم دینے کے قابل نہیں تھیں۔

چیف کی اہلیہ کیمریا کی بیماری کے باعث جیف کی والدہ نے رضا کارانہ طور پر سرو گیٹ بننے کی پیشکش کی حالانکہ ڈاکٹرز نے انہیں اس عمر میں بچے کو جنم دینے کا روکا تھا ۔

جیف کا کہناتھا کہ میں نے ایسی بے لوث اور محبت کرنے والی ماں نہیں دیکھی جوکہ اپنے خاندان کیلئے ہر قسم کی قربانی دینے کے لیے تیار رہیں۔

ان کا کہنا تھا کہ اہلیہ کا 4 سالہ بانجھ  پن کے علاج کے بعد مجھے معلوم ہوا کہ نیا بچہ پیدا کرنا ناممکن ہوگیا ہے لیکن ماں رضاکارانہ سرو گیٹ کی   پیشکش کی  ۔

نینسی ہاک  آئی وی ایف (IVF) سے گزرنے کے بعد فوراًحاملہ ہوگئیں جبکہ نومبر میں وہ بچے کو جنم دینے والی ہیں ۔

نینسی کا کہنا تھا کہ میں نے کبھی سوچا بھی نہیں تھا کہ میں 56 سال کی عمر میں حاملہ ہو جاؤں گی یا یہ ممکن ہو گالیکن یہ سب سے خوبصورت چیز ہے۔

اپنے بیٹے اور بہو کی بیماری کے حوالے سے انہوں نے بتایا کہ دونوں نے آئی وی ایف کے لیے بہت کوشش کی لیکن وہ اس میں  کامیاب نہیں پائے ۔

متعلقہ تحاریر