میڈیا پر اثر انداز ہونے کی کوشش،مریم نواز کی ایک اور آڈیو لیک

مریم نواز کو سینیٹر پرویز رشید سے جیو کے پروگرام رپورٹ کارڈ سے حفیظ اللہ نیازی کو نکالے جانے پر ہدایات لیتے سناجاسکتا ہے،نصرت جاوید اور رانا جواد کو تحائف بھجاوانے کا بھی ذکر

مسلم لیگ ن  کی نائب صدر مریم نواز کی ایک اور آڈیو لیک ہوگئی۔  مریم نواز کو سینیٹر پرویز رشید سے جیو نیوز  کے پروگرام رپورٹ کارڈ کے حوالےسے ہدایات لیتے ہوئے سنا جاسکتا ہے۔

لیک کی گئی نئی آڈیو ٹیپ میں سینیٹر پرویز رشید ن لیگ کی نائب صدر مریم نواز کو جیونیوز کی کسی سرکردہ شخصیت سے ملاقات سے قبل ہدایات دیتے ہوئے کہہ رہے ہیں  کہ ایک بات آپ نے ان سے ضرور کرنی ہے،ان کا ایک پروگرام ہوتا ہے  رپورٹ کارڈ جس میں حسن نثارصاحب  ہمیں بہت  گالیاں دیتے ہیں۔

یہ بھی پڑھیے

مریم نواز کی ایک اور آڈیو لیک ،میڈیا سے متعلق بڑا انکشاف

ثاقب نثار کی مبینہ آڈیو لیک، اے آر وائی بمقابلہ فیکٹ فوکس

جس پر مریم نواز بیچ میں لقمہ دیتی ہیں کہ اب ایک ارشاد بھٹی بھی آگئے ہیں جس پرویز رشید کہتے ہیں کہ جی اب  انہوں نے ارشاد بھٹی بھی ایڈ کرلیا ہے جو بہت ہی گھٹیا گفتگو کرتا ہے، مظہر عباس صاحب کی گفتگو میں بھی ٹلٹ ہمارے خلاف ہی ہوتا ہے،طنز بھی ہوتا ہے،مذاق بھی ہوتا ہےاور وہ باتوں کو اسپن بھی کرکے ہمارا مذاق اڑاتے ہیں ۔

پرویز رشید کہتے ہیں کہ وہاں کوئی  بندہ ایسا نہیں ہے کہ جس  کے بارے میں کہا جائے کہ وہ ہماراترجمان ہے۔بابر ستار ہیں وہ اپنی آزادانہ رائے رکھتے ہیں۔اس پر مریم نواز پھر لقمہ دیتی ہیں کہ وہ بھی عام طور پر ہمارے حق میں تو ہیں نہیں  ۔اس پرپرویز رشید بولے کہ  اس لیے میں نے کہا کہ کوئی ہمارے حق میں اس طرح نہیں۔لیکن چلیں گالم گلوچ نہیں کرتا ایک جینوئن سی گفتگو کرتا ہے۔گفتگو میں کم سے کم  غیراخلاقی بات نہیں ہوتی۔ لیکن یہ نہیں کہا جاسکتا کہ  وہ ہمارا نقطہ نظر لیتا ہو۔باقی ان میں ایک ایسا تھا جو ہمارا نقطہ نظر نہیں لیتا ہو لیکن  یہ جس طرح ہمیں گالیاں دیتے ہیں وہ عمران خان کیخلاف بھی وہی سلوک کرتا تھا

جس پر مریم نواز پھر بیچ میں لقمہ دیتے ہوئے کہتی ہیں نیازی (عمران خان کے بہنوئی حفیظ اللہ نیازی)۔ جس پر پرویز رشید ان کی تائید کرتے ہوئے کہتے ہیں جی نیاز ی، اس ہٹادیا ہے اور اس کا کالم بھی بند کردیا ہے۔یہ بڑی زیادتی اور ناانصافی کی بات ہے۔ اس پر مریم نواز کہتی ہیں کہ انکل میں ان سے پوچھوں گی  ناکہ پہلے یہ بتاؤ کہ اس کو ہٹایا کیوں ہے؟

جس پر پرویزرشید مریم نواز سے کہتے ہیں  کہ آپ سے میری درخواست ہوگی کہ آپ اس سے بھی بات کریں اور میر شکیل صاحب سے بھی  کریں ۔جس پر مریم نواز کہتی ہیں پہلے میں اس سے اندر کی خبر تو پوچھوں نا؟پرویز رشید بولے کہ اس سے پروگرام ان بیلنس ہوجائے گا۔عمران خان کے اوپر اگھر کوئی چیک تھا تو آپ نے ختم کردیا ہے اور ہمارے اوپر آپ نے بھونکنے والے کتے بٹھا دیے ہیں۔ مریم نواز کہتی ہیں یہ تو بالکل  جانبداری ہے۔پرویز رشید کہتے ہیں اس پر ضرور بات کیجیے گا۔

آڈیو ٹیپ کے دوسرے حصے میں مریم نواز  کونوازشریف کی جانب سے بیرون ملک سے لایے گئے تحائف معروف صحافیوں کو بھجوانے سے متعلق گفتگو کرتے دیکھا جاسکتا ہے۔مریم نواز کو یہ کہتے سنا جاسکتا ہے کہ ابو جان آزربائیجان سے جو دو باسکٹس لائے ہیں وہ بیک ہوگئی ہیں ان میں سے ایک نصرت جاوید اور ایک رانا جواد کو بھیجنی ہے۔واضح رہے کہ رانا جواد جیو نیوز کے ڈائریکٹر نیوز ہیں۔

Facebook Comments Box