صدر جو بائیڈن افغانستان کی صورتحال کے ذمہ دار  ہیں ؟

امریکی ریاست پینسلوینیا میں بل بورڈز آویزا کردیئے گئے جس میں صدر جوبائیڈن راکٹ لانچر اٹھائے طالبان کے حلیے میں دکھایا گیا ہے

امریکی صدر جوبائیڈن کے خلاف پینسلوینیا میں بل بورڈز آویزا کردیئے گئے جس میں انھیں راکٹ لانچر اٹھائے طالبان کے حلیے میں دیکھایا گیا ہے جس کے ساتھ تحریر ہے کہ "طالبان کو دوبارہ عظیم بنانا ہے”۔

امریکہ کی جانب سے افغانستان کو مکمل طورپر اتحادی فوج سے خالی کرنے کے فیصلے کے بعد افغانستان میں انسانی حقوق اور دہشتگردی کے پھیلاؤسے متعلق خدشات کے حوالے سے وسیع پیمانے پر بحث جاری ہے۔

یہ بھی پڑھیے

ہالی ووڈ کے پسندیدہ صدر ڈونلڈ ٹرمپ نہیں جوبائیڈن

امریکی ریاست پینسلوینیا کے ہائے وے پر افغانستان سے امریکی اور اتحادی فوج کے انخلاء کے چند ہفتوں بعد دیو قامت بل بورڈز کی ایک بڑی تعداد دیکھنے میں آرہی ہے جس میں امریکی صدر جو بائیڈن کو راکٹ لانچر ہاتھ میں پکڑے دیکھا گیا ہے  جبکہ ان کا حلیہ بھی طالبان جیسا ہے، اس بل بورڈ پر لکھا ہے کہ "طالبان کو دوبارہ عظیم بنانا ہے”۔

امریکی صدر کے حوالے سے اس طرح کے بل بورڈز سے ظاہر ہوتا ہے کہ امریکی شہری جوبائیڈن کےامریکی فوجیوں کو افغانستان سے نکالنے کے حق میں نہیں تھے اور آج طالبان جو افغانستان میں بھرپور طاقت میں ہیں اس کے  براہ راست ذمہ دار صدر جوبائیڈن ہیں۔

رپورٹس کے مطابق پینسلوینیا کے ہائی وے پر آویز یہ  تمام بل بورڈز سینیٹر "اسکاٹ وینجر” کی جانب سے لگوائے گئے ہیں جس پر انھوں نے 15 ہزار ڈالر خرچ کرکے امریکی صدر جوبائیڈن کے فیصلے پر اپنی ناراضگی کا اظہار کیا ہے۔

اسکاٹ وینجرکا کہنا ہے کہ صدر جوبائیڈن کا فیصلہ ان فوجیوں کے ساتھ ناانصافی ہے جنہوں نے افغانستان کی جنگ  میں قربانیاں دیں جو معذور ہوئے اور وہ جو اس طویل  جنگ کے باعث ذہنی امراض کا شکار ہوئے۔

 

انھوں  نے بتایا کہ وہ سابق امریکی صدر ڈونلڈ ٹرمپ کے حامی نہیں ہیں لیکن بل بورڈ پر جو نعرہ لکھا گیا ہے وہ ڈونلڈ ٹرمپ کے انتخابی نعرے سے متاثر ہوکر لیا گیا ہے جس میں انکا کہنا تھا کہ "امریکہ کو دوبارہ عظیم بنائیں۔

Facebook Comments Box