فیاض الحسن چوہان بغیر اطلاع تیسری مرتبہ ترجمان کے عہدے سے بولڈ

چوہان کو رواں سال اگست میں تیسری مرتبہ ترجمان پنجاب حکومت تعینات کیا گیا تھا۔

وزیر اعظم وسیم اکرم پلس وزیراعلی پنجاب عثمان بزدار اپنی سیٹ پر براجمان ہیں جبکہ ترجمان پنجاب حکومت فیاض الحسن چوہان کو عہدے سے ہٹانے کی وسیم اکرم پلس عثمان بزدار نے ہیٹرک مکمل کرلی ہے۔ دوسری طرف ایوان وزیر اعلی کی جانب سے معاون خصوصی برائے اطلاعات حسان خاور کو ترجمان حکومت پنجاب تعینات کرنے کا نوٹیفکیشن جاری کیا گیا۔

بطور ترجمان حکومت پنجاب عہدے سے ہٹائے جانے کی اطلاع فیاض الحسن کو اس وقت ملی جب وہ گورنر ہاوس لاہور میں کرکٹ میچ کی پریکٹس کر رہے تھے، تاہم جب میڈیا نے ان سے سوال پوچھا تو انکا کہنا تھا کہ اللہ کی قسم مجھے ابھی اس حوالے سے علم نہیں، کچھ دیر میں تفصیلات لے کر میڈیا کو آگاہ کرتا ہوں۔ میں کرکٹ کی بحالی کےلئے گورنر ہاؤس میں میچ پریکٹس کر رہا ہوں۔

یہ بھی پڑھیے

چیف سیکرٹری پنجاب کی ایما پر افسرشاہی میں بڑے پیمانے پر تبادلے

جبکہ انھوں نے بزدار کے فیصلے پر تحفظات کا اظہار کیا۔ لب پہ شکوہ بھی لائے اور کہا کہ وزیراعلیٰ کو ان کو اعتماد میں لینا چاہئے تھے۔

تین سالوں میں محکمہ اطلاعات میں یہ پہلی بار نہیں ہوا اس سے قبل کئی مرتبہ تبدیلی ہوچکی ہے۔

پنجاب حکومت کے ماضی پر نظر

ایک نظر ماضی پر ڈالیں تو بزدار حکومت نے کابینہ تشکیل دی تو 27 اگست 2018 کو فیاض الحسن چوہان کو پہلی بار وزیر اطلاعات مقرر کیا گیا۔ چھ ماہ دس دن بعد ان کے متنازعہ بیان پر انہیں عہدے سے ہٹا کر 6 مارچ 2019 کو انکی جگہ صمصام بخاری کو وزیر اطلاعات پنجاب بنایا گیا۔

فقط 4 ماہ 8 دن بعد صمصام بخاری سے بھی قلمدان واپس لے لیا گیا۔ وہی 19 جولائی 2019 کو انکی جگہ میاں اسلم اقبال کو وزارت اطلاعات پنجاب کا اضافی قلمدان دیا گیا۔

اسلم اقبال کے پاس 4 ماہ 14 دن تک وزیر اطلاعات پنجاب کا اضافی قلمدان موجود رہا اور اسی سال 2 دسمبر کو فیاض الحسن چوہان ایک بار پھر یعنی دوسری بار وزیر اطلاعات بنا دئیے گئے۔ اس بار فیاض چوہان 11 ماہ وزیر اطلاعات رہے۔ 2 نومبر 2020 کو دوسری بار فیاض چوہان سے اطلاعات کا قلمدان واپس لے لیا گیا اور ذمہ داریاں فردوس عاشق اعوان کو بطور معاون خصوصی برائے اطلاعات پنجاب بنا کر انہیں سونپ دی گئیں۔

فردوس عاشق اعوان نے 9 ماہ 4 دن عہدے پر اپنی خدمات سرانجام دیں۔ چھٹے وزیر اطلاعات پنجاب کی تقرری کی بجائے عثمان بزدار نے نے یہ قلمدان اپنے پاس رکھا اور فیاض الحسن چوہان کو تیسری بار ترجمان حکومت پنجاب مقرر کردیا۔

تاہم فیاض الحسن چوہان کے بعد خالی عہدے پر حسان خاور کو معاون خصوصی برائے اطلاعات مقرر کیاگیا یے اب دیکھتے ہیں یہ کتنے ماہ تک اس قلمدان پر براجمان رہتے ہیں ۔

Facebook Comments Box